جمعه 19 اکتوبر 2018ء
جمعه 19 اکتوبر 2018ء

ٰٰٰٰٰحکومت آزادکشمیرکو بااختیار بنانے کا خیر مقدم

  میرپور(دھرتی نیوز )جموںوکشمیر لبریشن لیگ کے سربراہ چیف جسٹس (ر) عبدالحمید نے حکومت آزادکشمیرکو بااختیار بنانے کے سلسلے میں آزادکشمیر کے وزیراعظم راجہ محمد فاروق حیدرخان کی کوششوں کو سراہتے ہوئے ان کے تمام اقدامات کی مکمل حمایت کااعلان کیا ہے۔ جموںوکشمیر کونسل کے خاتمہ اور حکومت آزادکشمیر کو بااختیار بنانے کے اقدام پر وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی کاشکریہ بھی اداکیا ہے ۔اپنے ایک بیان میں چیف جسٹس (ر) عبدالمجید نے کہا ہے کہ جموںوکشمیر لبریشن لیگ شروع سے ہی آزادکشمیر جو تحریک آزادی کشمیرکا بیس کیمپ ہے کی حکومت کو ایک باوقاراور بااختیار حکومت بنانے کے لئے کوشاںرہی ہے اور اس مقصدکے لئے آزادکشمیر کے عبوری آئین ایکٹ1974میں ترامیم کے لئے سرگرم کردار اداکرتی رہی بلکہ وزیراعظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدرخان اس سلسلے میں پوری جرات اوراستقامت سے سرگرم عمل رہے اور اپنی انتھک کوششوں، تدبر اورفہم وفراست سے کام لیتے ہوئے انہوںنے وفاقی حکومت کے ارباب اختیارباالخصوص وزیراعظم پاکستان شاہدخاقان عباسی کوبھی اپنے مبنی برحقائق موقف پربھی قائل کرلیاہے اورحکومت پاکستان آزادکشمیر حکومت کوبااختیار اورباوقاربنانے پررضامند ہو گئی ہے جوبلاشبہ ایک تاریخی اقدام ہے جس کی ریاست جموںو کشمیرکے باشعورلوگوںکو بھرپور تائیدوحمایت کرنی چاہیے۔جبکہ جموںوکشمیرلبریشن لیگ ا س سلسلے میں پوری قوت اورسرگرمی سے اپناکرداراداکرے گی۔جسٹس(ر) عبدالمجیدملک نے کہاکہ ایکٹ1974میں مجوزہ ترامیم اور جموںوکشمیر کونسل کے خاتمہ سے حکومت آزادکشمیر کو تمام اختیارات حاصل ہو جائیں گے جوقبل ازیں جموں وکشمیر کونسل کوحاصل تھے ۔جبکہ وہ تمام ریاستی وسائل جو قبل ازیں جموںوکشمیرکونسل صرف کرتی تھی بھی حکومت آزادکشمیرکی دسترس میں آجائیںگئے جس سے آزادکشمیر کی حکومت ریاست کی تعمیرو ترقی ، عوام کی فلاح و بہبود اورخوشحالی کے ساتھ ساتھ تحریک آزادکشمیر کی کامیابی کے حوالے سے بھی اپنا بھرپورکرداراداکرسکے گی