بدھ 21 نومبر 2018ء
بدھ 21 نومبر 2018ء

سری نگر مظفرآباد تجارت ، پستہ پر عائد پابندی ختم

چناری(خصوصی رپورٹر)بھارتی کسٹم نے مقبوضہ کشمےر کے اےل او سی ٹرےڈرز کے مطالبات تسلےم کرتے ہوئے آزاد کشمےر سے سرےنگر مظفرآباد تجارت کے زرےعے جانے والے پستہ پر عائد پابندی ختم کردی جس کے بعد مقبوضہ کشمےر کے تاجروں نے احتجاجا معطل کی گئی دو طرفہ تجارت آئندہ ہفتے منگل کے روز سے بحال کر نے کا اعلان کر دےا ۔تفصےلات کے مطابق بھارتی کسٹم نے آزاد کشمےر سے انٹرا کشمےر ٹرےڈ کے زرےعے مقبوضہ کشمےر جا نے والے ثابت اور پستہ گری پر پابندی عائد کر رکھی تھی جس کے بعد مقبوضہ کشمےر کے تاجروں نے اس پابندی کے خلاف 26فروری سے احتجاجا سرےنگر مظفرآباد تجارت معطل کر دی تھی گذشتہ روز بھارتی کسٹم کے ذمہ داران کے ساتھ مقبوضہ کشمےر سے تعلق رکھنے والے اےل او سی ٹرےڈرز کے کامےاب مذاکرت کے بعد مقبوضہ کشمےر کے تاجروں نے ہڑتال ختم کر نے اور آئندہ ہفتے بروز منگل چھ مارچ کے روز سے انٹرا کشمےر تجارت دوبارہ بحال کر نے کا اعلان کےا ہے ےاد رہے کہ بھارتی کسٹم کے ذمہ داران نے تاحال پستہ پر لگائی جانے والی پابندی ختم کر نے کا زبانی حکم نامہ جاری کےا ہے تاجروں کے مطابق بروز پےر تک باقائدہ طور پر اس پابندی کے خاتمہ کا تحرےری حکم نامہ جاری ہو نے کے بعد چھ مارچ بروز منگل سے دو طرفہ تجارت بحال کر دی جائے گی جبکہ دوسری طرف آزاد کشمےر آنے والے ٹرکوں کی پاکستانی کسٹم کی جانب سے پکڑ دھکڑ کا سلسلہ تاحال جاری ہے وفاقی اور آزاد کشمےر حکومتوں نے اس مسئلہ کے حل کے لےے تاحال کوئی اقدامات نہےں اٹھائے وزےراعظم فاروق حےدر نے تےرہ فروری تک مسئلہ کر نے کی ےقےن دہانی کے بعد مکمل طور پر خاموشی اختےار کر لی ہے جس کے باعث اےل او سی ٹرےڈرز کی تشوےش مےں دن بدن اضافہ ہوتا جارہا ہے آزاد کشمےر سے تعلق رکھنے والے اےل او سی ٹرےڈرز نے اےک بار پھر مطالبہ کےا ہے کہ مقبوضہ کشمےر سے آنے والے ٹرکوں کی پاکستان کسٹم کی جانب سے پکڑ دھکڑ کا مسئلہ فوری طور پر حل کےا جائے تانکہ دو طرفہ تجارت بند ہو نے کے بجائے مزےد پروان چڑھ سکے اور آر پار کے عوام کے درمےان رشتے مزےد مضبوط ہوں گے۔