پیر 19 نومبر 2018ء
پیر 19 نومبر 2018ء

آرپار تجارت محدود کرنے پر تاجران سراپا احتجاج

چناری (خصوصی رپورٹر)چیف سیکرٹری آزاد کشمیر کی ہدایت پر ٹریول اینڈ ٹریڈ اتھارٹی آزاد کشمیر نے انٹرا کشمیر ٹریڈ کو محدود کر نے کے لیے نیا حکم نامہ جاری کر دیا آزاد و مقبوضہ کشمیر کے تاجر سراپا احتجاج۔تفصیلات کے مطابق پیر کے روز سرینگر مظفرآباد بس سروس کی روانگی کے موقعہ پر لائن آف کنٹرول کو ملانے والے چکوٹھی اوڑی امن برج پر چکوٹھی کراسنگ پوائنٹ کے ٹی ایف او میجر(ر)طاہر کاظمی نے مقبوضہ کشمیر کے اپنے ہم منصب کو آگاہ کیا کہ منگل چھ مارچ کے روز سے مقبوضہ کشمیر سے آنے والے کیلے کے پانچ اور زیرہ کا صرف ایک ٹرک وصول کیا جائے گا۔مقبوضہ کشمیر سے زائد آنے والے ٹرکوں کو آزاد کشمیر میں ان لوڈ کیے بغیر واپس مقبوضہ کشمیر بھیج دیا جائے گا۔ آزاد کشمیر حکومت کی جانب سے اس فیصلے کے بعد آزاد و مقبوضہ کشمیر کے تاجر سراپا احتجاج ہیں، تاجروں نے اس پابندی کو ماننے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی پابندی سے دو طرفہ تجارت بند ہو جائے گی۔ دریں اثناءٹی ایف او چکوٹھی کراسنگ پوائنٹ میجر(ر) طاہر کاظمی نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیلے اور زیرہ کی تجارت آزاد کشمیر حکومت کی جانب سے محدود کرنے کی تصدیق کر دی ہے ۔