هفته 22  ستمبر 2018ء
هفته 22  ستمبر 2018ء

گلاب سنگھ کا دن منانے والے عناصر کو شرم آنی چاہیے،وزیراعظم آزادکشمیر

فتح پور(دھرتی نیوز) وزیراعظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا ہے کہ پاکستان اور پاک فوج کے خلاف باتیں کرنا تو درکنار ایسا سوچنے والوں کے لیے بھی آزادکشمیر میں کوئی جگہ نہیں آزادکشمیر کے عوام کی حفاظت کے لیے 24 گھنٹے سینہ سپر چوکس جوانوں کو سلام پیش کرتا ہوں ہندوستان تمام محاذوں سے نامراد ہو کر نظریاتی تخریب کاری پر اتر آیا ہے اور بیرون ملک اس نے بہت سارے سرمایہ کار بٹھا ئے ہیں کہ آزادکشمیر کے لوگوں کو خریدے مگر اسے یہ بتا دینا چاہتے ہیں کہ مقبوضہ کشمیر کے اندر جو تم نے انسانیت سوز مظالم ڈھائے ہماری ماﺅں بہنوں بیٹیوں کی عصمت دری کی بزرگوں بوڑھوں بچوں کاقتل عام کیا اس کے باوجود کشمیری اپنے بیٹوں کو پاکستانی پرچم میں دفناتے ہیں ہم ان کے وارث اور لائن آف کنٹرول پر بھارتی قتل عام سے مرعوب ہونے والے نہیں ہندوستان کی فوج کو پاکستان کی فوج کے برابر کرنا تو درکنار ایسا سوچنا بھی گناہ کبیرہ ہے جس کو حکومت سے شکایت ہے وہ مظفرآباد آئے میرے دفتر کے باہر مظاہرہ کرے دھرنا لگائے میرے سر آنکھوں پر مگر لائن آف کنٹرول کی جانب مارچ کی کوئی جوازیت نہیں بنتی لوگوں کو سوچنا چاہیے کہ آج بھی لائن آف کنٹرول پر فائرنگ سے لوگ زخمی ہوئے ہیں کیا وجہ ہے کہ مارچ والے دن انہوں نے سفید جھنڈے لہرا دیے تھے۔ آزادکشمیر میں گلاب سنگھ کا دن منانے والے مٹھی بھر عناصر کو شرم آنی چاہیے یہاں اس نے انسانوں کی چمڑیاں اتاریں اور ظلم و بربریت کی بدترین مثالیں قائم کیں آزادکشمیر آزاد خطہ ہے اس کا موازنہ کسی بھی صورت مقبوضہ کشمیر سے نہیں کیا جا سکتا جو لوگ وہاں رہ کر آئے ہیں ان کو پتہ ہے کہ لوگ کیسے مشکل میں اپنی زندگیاں گزار رہے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے غازی کشمیر سردار فتح محمد خان کریلوی کی برسی کے موقع پر منعقدہ تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب کی صدارت سابق وزیراعظم سردار سکندر حیات خان نے کی۔جبکہ تقریب میںوزےر خوارک سےد شوکت شاہ ، وزےر سماجی بہبود محترمہ نورےن عارف راجہ ، آزاد کشمےر کے وزےر مال سردار فاروق سکندر خان ،اےڈمنسٹرےٹر ضلع کونسل راجہ اےوب ،صدر بار کوٹلی راجہ بنارس اےڈووکےٹ مےجر (ر) وزےر، ڈی جی ذوالفقار علی ملک ، سابق چےئرمےن ضلع کونسل راجہ اقبال سکندر ، چوہدری فاروق اےڈووکےٹ ، خورشےد قادری ، سابق صدارتی مشےر سردار منان گوہر،ملک آفتاب انجم ، راجہ اےاز نثار ودےگر بھی موجود تھے ۔ وزیراعظم آزادکشمیر نے کہاکہ ہماری حفاظت اور بقاء، آزادی پاکستان کے ساتھ ہے مقبوضہ کشمیر کے اندر قابق بھارتی فوجی نوجوانوں پر جوتے اور ڈنڈے مار کر اور عورتوں بچوں کو گھسیٹتے ہیں اور انہیں پاکستان مردہ باد کا نعرہ لگانے کو کہتے ہیں لیکن اس کے باوجود کشمیری اپنے لخت جگر کو سبز ہلالی پرچم میں دفناتے ہیں پاکستان ہمارا عقیدہ اور ایمان کا حصہ کشمیرکے لوگوں کی قربانیوں کی لاج رکھنا ہماری ذمہ داری ہے ۔ اب تک لائن آف کنٹرول پر ہندوستانی فائرنگ سے 51 کروڑ روپے کا نقصان پہنچا ہے ۔