هفته 22  ستمبر 2018ء
هفته 22  ستمبر 2018ء

موسلادھار بارش ،سینکڑوں مکانات ، دکانات کی چھتیں اڑگئیں

راولاکوٹ ، باغ ، دھیرکوٹ ، مظفرآباد ، اسلام آباد، راولپنڈی ، پانیولہ ( دھرتی نیوز، مانیٹرنگ ڈیسک ) ملک کے دیگر حصوں کی طرح آزادکشمیر میں بھی موسلادھار بارش سے گرمی کی شدت میں کمی واقع ہوئی جبکہ تیز آندھی و ہوائی طوفان کے باعث سینکڑوں مکانات اور دکانوں کی چھتیں اڑگئیں ، آندھی و ہوائی جھکڑ سے درخت بھی جڑوں سے اکھڑ گئے، بجلی کا نظام درہم برہم ہو کر رہ گیا، اطلاعات کے مطابق دھیرکوٹ کے نواحی علاقہ جات میں چالیس کے لگ بھگ مکانات اور دکانوں کی چھتیں اڑگئیں تاہم کسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی ، پانیولہ اور اس کے تمام نواحی علاقوں میں تیز آندھی اور گرج چمک کے ساتھ بارش موسم خوشگوار اور روزہ داروں کے چہرے کھل اٹھے بارش سے گرمی کا زور ٹوٹ گیا ظہر کے فوراً بعد کالی گھٹائیں چھا جانے سے دن میں رات کا سماں دکھتا رہا اور اندہیرا چھا گیا جس کے فوراً بعد تیز بارش کا سلسلہ شروع ہوا جو وقفے وقفے سے عصر تک جاری رہا جھکڑ چلنے سے درخت جڑوں سے اکھڑ گئے اور بجلی کے تار بھی بری طرح متاثر ہوئے جسکے باعث بجلی کا نظام درہم برہم ہو گیا تاہم چرند پرند اور پودوں کو حالیہ بارش سے انتہائی فائدہ جبکہ فضائی آلودگی میں کمی واقع ہو گئی۔مظفرآباد سے ایجنسی کے مطابق شدید گرمی کے بعد دارالحکومت سمیت ملحقہ علاقوں میں جل تھل،بوندا باندی کے ساتھ شدید ہوا کے جھکڑ اور آندھی سے کئی علاقوں میں بجلی کا نظام معطل ۔سائین بورڈ گرنے سے ایک ریڑھی بان زخمی جبکہ اپر چھتر اور شہر کے دیگر علاقوں میں سائین بورڈز زمین پر گر پڑے۔شدید آندھی سے مظفرآباشہر اور دومیل ،چھتر،چہلہ بانڈی،جلال آباد سمیت کئی علاقوں میں درخت جڑوں سے اکھڑ گئے۔کاروباری سرگرمیاں کچھ دیر کے لیے معطل ہوکر رہ گئیں۔شدید گرمی کے باعث مظفرآباد درجہ حرات تین روز سے 34سے 44کے درمیان رہا تاہم گزشتہ روز ہلکی بارش وباندا باندی کے بعد موسم قدر خوشگوار ہوچکا ہے اور درجہ حرارت میں کافی کمی واقع ہوئی ہے تاہم بلدیہ اور انتظامیہ کی ناقص حکمت عملی کے باعث شہر میں سائین بورڈز گرنے کے واقعات پیش آئے ہیں چہلہ بانڈی کے مقام پر مرغ شاپ کا دیو ہیکل بورڈ گرنے سے قریب کھڑے ریڑھی بان شبیر احمد کا سر پھٹ گیا جسے فوری طورپر سی ایم ایچ منتقل کردیا گیا ہے۔بورڈ گرنے سے مرغ شاپ اور ریڑھی کو بھی نقصان پہنچا ہے۔