بدھ 16 اکتوبر 2019ء
بدھ 16 اکتوبر 2019ء

لبریشن فرنٹ نے الحاق پاکستان کے نعرے کو غداری قرار دینے کا موقف ترک کر دیا

 راولاکوٹ (دھرتی نیوز)راولاکوٹ جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین اور ممتاز کشمیر ی رہنما سردار محمد صغیر خان ایڈووکیٹ نے صابر شہید اسٹیڈیم راولاکوٹ میں جے کے ایس ایل ایف، کے 13 واں سالانہ مرکزی کنونشن سے بحثیت مہمان خصوصی خطا ب کرتے ہو ئے کہا ہے کہ ریاست جموں وکشمیر کی تمام اکائیوں کو متحد کرکے چار اکتوبر 1947کے اعلامیہ کے مطابق کشمیر میں ایک با اختیار، باوقار آئینی حکومت قائم کی جائے، انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ،یو این او، چارٹر آف ڈیمانڈ کے مطابق کشمیری عوام کو حق خود اردیت دلائے غیر جابندارنہ،بلا خوف و خطر رائے شماری کروا کر کشمیریوں کو اپنی قسمت کا فیصلہ کرنا کا اختیار دیا جائے اس رائے شماری کے تحت کشمیر ی قوم جو فیصلہ کرے گی،الحاق پاکستان تو کیا اگر الحاق ہندوستان کے حق میں اکثریتی فیصلہ آتا ہے تو جے کے ایل ایف اس کو قبو ل کرے گی انہوں نے کہا کہ فوری طور پر معاہد ہ کراچی اور آزاد کشمیر عبوری آئین ایکٹ 1974کو فی الفو ر منسوخ کرکے یہاں پر ایک با اختیار او رباوقار آئین دے کر حکومت قائم کی جائے، اس سے قبل راولاکوٹ میں جے کے ایل ایف اور جے کے ایس ایل ایف کے زیر اہتمام ایک بہت بڑی احتجاجی ریلی گئی جس میں آزاد کشمیر بھر سے  اور پاکستان کے مختلف علاقوں سے ہزاروں نوجوانوں او رلوگوں نے شرکت کی، ریلی کا آغاز پوسٹ گریجویٹ کالج راولاکوٹ سے کیا گیا جو بڑی بڑی شاہرات کا چکر لگانے کے بعد صابر شہید اسٹیڈیم میں ایک بہت بڑے جلسہ عام کی شکل اختیا رکر گیا یہ جلسہ مسلسل چار گھنٹے تک جاری رہا، سردار نعیم اختر نامنوٹہ، حال سعودی عرب کے قومی ترانوں پر مشتمل نغمات نے پنڈال میں لوگوں پر سکتہ طاری کیا، اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے  سردار محمد صغیر خان نے کہا کہ  جموں کشمیر لبریشن فرنٹ نے تحریک آزادی کشمیر کو نئے اندا ز میں آگے بڑھانے نئی حکمت عملی سامنے لاتے ہوئے الحاق پاکستان کے نعرے کو غداری قرار دینے کا موقف ترک کر دیا۔اور ساتھ ہی اپنے کارکنان کو چیئرمین جے کے ایل ایف محمد صغیر خان نے حکم دیا ہے کہ وہ آئندہ اس نعرے سے اجتنا ب کریں راولاکوٹ میں جے کے ایس ایل ایف کے تیرویں مرکزی انقلاب جموں کشمیر کنونشن سے خطاب کرتے محمد صغیر خان نے کہا کہ کشمیریوں کو غیر مشروط حق خودارادیت ملنا چاہیے ہم خود مختار کشمیر کے حق میں اپنی قوم سے ووٹ لیں گے لیکن اگر ہمارے نظریے کو رد کر کہ کشمیری قوم نے کوئی اور حل سامنے لایا تو ہم اسے قبول کر لیں گے الحاق کرے جو بے غیرت،الحاق کا جو یار ہے،غدار ہے،کے نعرے ایک سازش کے تحت لگوائے گئے یہ کھبی جے کے ایل ایف کے آفیشل نعرے نہیں رہے جو کوئی بھی دیانت داری اور خلوص سے الحاق پاکستان حتی کہ الحاق ہندوستان کی بات کرتا ہے وہ ہمارے لیے محترم ہے اس کے بر عکس جو لوگ ہندوستان یا پاکستان سے پیسے اور تنخواہ لیکر خود مختار کشمیر کا نعرہ لگاتے ہیں ہم انکو غدار سمجھتے ہیں اسی طرح جو مفادات اور تنخواہ لیکر الحاق ہندوستان اور الحاق بھارت کی بات کرتے ہیں ہم انکو بھی غدار سمجھتے ہیں لالچ سے مبراء ہو کر خالص سوچ کی بناء پر کوئی الحاق کی بات کرے یا خودمختاری کی وہ محترم اور محب وطن ہے کوہالہ ہائیڈرل پراجیکٹ کسی صورت نہیں بننے دیں گے دریائے نیلم جہلم کو بہنے سے روک کر مظفرآباد کو تباہ نہیں ہونے دیں گے دریا بچاو کمیٹی نے اگر اپنے موقف سے دستبرداری کی تو ہم پھر بھی اپنے موقف پر قائم رہیں گے کسی صورت نیلم جہلم کا رخ موڑ کر مظفرآباد تباہ نہیں ہونے دیں گے