بدھ 01 دسمبر 2021ء
بدھ 01 دسمبر 2021ء

نیلم میں گرفتار سیکورٹی اہلکاران کے ورثاء نے رہائی کے لیے تین دن کی ڈیڈ لائن دے دی

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک)آزاد کشمیر میں انتخابات کے دوران تعینات کی گئی فرنٹیئرکانسٹبلری(ایف سی) کے ضلع نیلم کے علاقے شاردہ میں تعینات بعض اہلکاران اور مقامی پولیس کے درمیان ہونے والے تصادم کے دوران گولی لگنے سے جاں بحق ہونے والے نوجوان کے مبینہ قتل کے الزام میں گرفتار ایف سی کے اہلکاران کے ورثاء نے دھمکی دی ہے کہ اگر آئندہ اتوار تک آزاد کشمیر پولیس گرفتار اہلکاران کو رہا نہیں کرتی تو ہم کوئی بھی انتقامی کارروائی کر سکتے ہیں جس کی تمام ترذمہ داری حکومت پاکستان پر ہو گی۔جمعرات کو کوہستان کے ایک نمائندہ وفد نے انسپکٹر جنرل پولیس کے پی کے سے ملاقات کے بعد ویڈیو پیغام جاری کیا ہے کہ ایف سی کے یہ اہلکار آزاد کشمیر میں انتخابات کے دوران امن و امان قائم کرنے کے لیے گے تھے۔کسی معمولی بات پر وہاں کی پولیس نے شہریوں کے تعاون سے ان پر تشدد کیا ان کا اسلحہ چھین کر دریا برد کیا اور سر عام اعلان کیا کہ ان اہلکاروں سے ڈرو نہیں ان کو مارو۔ورثاء کا کہنا تھا کہ آئی جی کے پی کے نے یقین دہانی کروائی ہے کہ وہ اس مسلے کو حل کروانے میں کامیاب ہو جائیں گے۔انہوں نے اتوار کی ڈیڈ لائن دیتے ہوئے دھمکی دی کہ اگر ان گرفتار اہلکاران کو رہا نہ کیا گیا تو وہ کوئی بھی کارروائی کر سکتے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ اتوار تک رہائی نہ ہونے کی صورت میں پٹن کے مقام پر ایک گرینڈ جرگہ ہو گا جس میں آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔انہوں نے ساتھ ہی امید ظاہر کی کہ اتوار سے پہلے یہ مسلہ حل ہو جائے گا۔  

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم