بدھ 16 اکتوبر 2019ء
بدھ 16 اکتوبر 2019ء

عمران خان کے لیے تیار کی جانے والی چپل ضبط،پچاس ہزار جرمانہ

پشاور (بی بی سی،دھرتی نیوز)وزیرِ اعظم کو سانپ کی کھال سے تیار چپل دینے کے خواہشمند چاچا نور الدین کے خاندان کے مطابق صوبہ خیبر پختونخوا کے محکمہ وائلڈ لائف نے ان کی دکان پر چھاپہ مار کر عمران خان کے لیے بنائی گئی چپل اپنے قبضے میں لے لی ہے۔ اور ان اسے پچاس ہزار روپے جرمانہ کیا گیا ہے۔بی بی سی کے مطابق مشہور زمانہ ’کپتان چپل‘ بنانے والے چاچا نور الدین کے بقول عمران خان کے ایک چاہنے والے نے انھیں امریکہ سے سانپ کی انتہائی خوبصورت کھال بھجوائی تھی۔ نعمان نامی شخص وزیرِاعظم کے لیے ایک خاص قسم کی چپل بنوا کر عید کے موقعے پر انھیں تحفتاً پیش کرنا چاہتا تھا۔تاہم ان کے بڑے صاحبزادے سلام الدین کے مطابق میڈیا پر عمران خان کے لیے سانپ کی چپل بنانے کے حوالے سے اطلاعات آنے کے بعد اتوار کی صبح محکمہ وائلڈ لائف کے اہلکار ان کی دکان سے عمران خان کے لیے تیار کردہ چپل لے گئے اور پیر کے روز انھیں پیش ہونے کا حکم بھی دیا گیا ہے، ورنہ ان پر جرمانہ بھی ہوسکتا ہے۔پشاور کے محکمہ وائلڈ لائف کے ڈی ایف او عبدالعلیم نے بی بی سی کو بتایا کہ چاچا نور الدین کے حوالے سے ممنوع نوعیت کی کھالیں استعمال کرنے کی اطلاعات پر ان کی دکان پر چھاپا مارا گیا اور وہاں ایک ایسے چپل کا جوڑا بر آمد ہوا۔عبدالعلیم نے بتایا کہ محکمے نے اس وقت قانونی کارروائی شروع کردی ہے اور چپل ماہرین کو معائنہ کے لیے بھیج دی گئی ہے۔ رپورٹ آنے کے بعد فیصلہ کیا جائے گا کہ چاچا نور الدین کے خلاف کیا قانونی کارروائی کی جائے۔تاہم اسلام الدین کا اصرار ہے کہ انھوں نے جان بوجھ کر کوئی غلط کام نہیں کیا اور اگر انجانے میں ان سے کوئی غلطی ہوئی ہے تو اس حوالے سے قانون جو کہتا ہے وہ کرنے کو تیار ہیں۔ان کا کہنا ہے ’ہم نے نہ تو سانپ پکڑا ہے اور نہ ہی مارا ہے اور نہ ہی یہ کھال ہم نے خود خریدی ہے۔ یہ کھال نعمان نے امریکہ سے بھجوائی تھی، اس کا ڈبہ ہمارے پاس محفوظ ہے اور اُس پر اِس کے بارے میں سب تفصیلات موجود ہے۔