جمعرات 02 اپریل 2020ء
جمعرات 02 اپریل 2020ء

اہم خبریں

آزادکشمیر، مزید تین مریضوں میں کورونا وائرس کی تشخیص

مظفرآباد(پی آئی ڈی)آزادکشمیر میں کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کہ تعداد 9 ہو گئی۔ وزیر صحت آزادکشمیر ڈاکٹر نجیب نقی نے مزید 3 افراد میں کرونا وائرس کی موجودگی کی تصدیق کر دی۔دو مریضوں کا تعلق بھمبر جبکہ ایک کا پلندری سے ہے۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حکومتی فوکل پرسن،وزیر صحت و خزانہ ڈاکٹر نجیب نقی نے کہاکہ آزادکشمیر میں کورونا ٹیسٹ کرنے کہ استعدا میں اضافہ کر رہے ہیں۔ میرپور اور مظفرآباد میں کورونا مریضوں کیلئے الگ ہسپتال قائم کر دیئے ہیں جبکہ راولاکوٹ میں بھی کورونا مریضوں کیلئے ہسپتال بنا رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ قرنطینہ مراکز میں سہولیات میں اضافے کیلئے فنڈز فراہم کردیئے ہیں۔ آزادکشمیر میں کورونا سے نمٹنے کیلئے  لوکل گورنمنٹ کے تعاون سے یونین کونسل کی سطح پر02ہزار سے زائد رضا کار ایمرجنسی رسپانس اینڈ مینجمنٹ کمیٹیاں تشکیل دے رہے ہیں جبکہ 800سے زائد کمیٹیاں بنا دی گئی ہیں جن میں ہر گاؤں کے امام مسجد، مقامی اساتذہ اور لیڈی ہیلتھ ورکر کو رکھا جارہا ہے۔ یہ کمیٹیاں مرکزی کنٹرول روم سے مسلسل رابطے میں رہیں گی جسکے لئے آئی ٹی بورڈ نے سافٹ ویئر بنا دیا ہے جبکہ کرونا الرٹ آئی ٹی کنٹرول بھی کام کررہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ مرکزی کنٹرول روم کی نگرانی وزیراعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدر خود کر رہے ہیں اور لمحہ بہ لمحہ کی صورتحال سے آگاہ ہیں۔ وزیر صحت نے کہاکہ آزادکشمیر کے تمام علاقوں میں محکمہ صحت کا عملہ موجود ہے جو سکریننگ کررہا ہے اور مشتبہ افراد کو قریبی قرنطینہ مراکز میں منتقل کیا جارہا ہے۔ وزیر اعظم آزادکشمیر کی ہدایت پر تمام اضلاع میں طبی عملے کا حفاظتی سامان پہنچا دیا گیا ہے۔ محکمہ صحت کے ترجمان کے مطابق آزادکشمیر میں کرونا وائرس کے شبہ میں گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران مزید10 نئے افراد کے ٹیسٹ لے لیے گئے جبکہ مزید46افراد کو مختلف قرنطینہ سینٹرز سے ٹیسٹ کے نتائج منفی آنے پر ڈسچارج کر دیا گیا جبکہ تین نئے افراد میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔ محکمہ صحت عامہ آزادحکومت ریاست جموں وکشمیر کی جانب سے جاری رپورٹ کے مطابق آزادکشمیر میں اب تک کرونا وائرس کے شبہ میں کل249 افراد کے ٹیسٹ لیے گئے جن میں سے188کے نتائج آچکے ہیں اور صرف9افراد میں کرونا وائرس کی موجودگی پائی گئی جبکہ کل146  افراد کوکرونا ٹیسٹ منفی آنے پر آزادکشمیر بھر کے مختلف قرنطینہ سینٹرز سے ڈسچارج کر دیا گیا۔ نئے درج ہونے والے کیسز میں مظفرآباد ڈویڑن کے علاوہ باقی اضلاع میں مشتبہ افراد کے سیمپل نیشنل انسٹیٹیوٹ آف ہیلتھ سائنسز کو بھیج دیے گئے جبکہ مظفرآباد ڈویڑن کے ٹیسٹ ایمز مظفرآباد میں کیے جارہے ہیں۔ پریس ریلیز کے مطابق61افراد کے ٹیسٹ کے رزلٹ آنا باقی ہیں جو ایک دو روز میں موصول ہوجائیں گے۔گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کرونا وائرس کے شبہ میں آنے والے مریضوں میں ایمز مظفرآباد میں 08، ڈی ایچ کیو ہسپتال راولاکوٹ میں 02نئے کیس درج ہوئے۔ رپورٹ کے مطابق تمام اضلاع میں قرنطینہ سینٹرز اور آئسو لیشن وارڈز قائم کیے گئے ہیں اور مشتبہ افراد کو قرنطینہ سینٹر ز میں رکھا جارہا ہے جبکہ کرونا ٹیسٹ کو نتیجہ پازٹیو آنے کے بعد ان افراد کو آئسولیشن وارڈز میں منتقل کر دیا جاتا ہے۔ تمام انٹری پوائنٹس پر محکمہ صحت کا عملہ موجود ہے جو ہمہ وقت مسافروں کی سکریننگ کررہا ہے۔

پاکستان

کورونا وائرس مسافر ٹرین سروس31مارچ تک بند

  اسلام آباد(صباح نیوز)ملک میں بڑھتے کورونا وائرس کے خطرے کے پیش نظر مسافر ٹرین سروس کو 31مارچ تک عارضی طور پر معطل کردیا گیا، وزارت ریلوے نے  نوٹیفکیشن  بھی جاری کردیا۔ ریلوے ہیڈ کوارٹر میں وزیر ریلوے شیخ رشید احمد، چیئرمین حبیب الرحمن، سی ای او ریلوے دوست علی لغاری، چیف آپریٹنگ آفیسر عامر بلوچ سمیت دیگر افسران نے ویڈیو لنک کانفرنس میں شرکت کی جس میں منگل اور بدھ کی درمیانی  رات 12 بجے سے ملک بھر میں مسافر ٹرین آپریشن بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا،ٹرین آپریشن31 تک بند رہے گا۔اس حوالے سے وزارت ریلوے نے نوٹیفکیشن جاری کردیا،  نوٹیفکیشن کے مطابق ٹرین سروس کی معطلی کا اطلاق  31 مارچ تک 7 روز کے لیے ہوگا۔ چئیرمین ریلوے بورڈ حبیب الرحمان گیلانی کی منظوری سے جاری کردہ نوٹیفیکیشن کے مطابق بند ہونے والی ٹرینوں کے وہ مسافر جنہوں نے ایڈوانس بکنگ کروائی ہوئی ہے، انہیں ٹرین آپریشن کے بحال ہوتے ہی ترجیحی بنیادوں پر ان کی مرضی کے

انٹرنیشنل

فورڈ“اور جنرل الیکٹرک کا معاہدہ، 100 دنوں میں 50 ہزار وینٹی لیٹرز تیار کرنے کا منصوبہ

” نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکہ کی گاڑیاں بنانے والے کمپنی فورڈ اور جنرل الیکٹرک اب مل کر صرف 100 دنوں میں 50 ہزار وینٹی لیٹرز بنائیں گی۔خیال رہے کہ امریکہ میں کورونا وائرس کے باعث پوری دنیا میں اب تک سب سے زیادہ کیسز سامنے آئے ہیں جبکہ اموات میں بھی تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔ بی بی سی کے مطابق دونوں کمپنیوں کا کہنا ہے کہ وہ وینٹی لیٹرز کا غیر پیچیدہ ڈیزائن بنائیں گی اور مشیگن میں فورڈ کے گاڑیاں بنانے والے پلانٹ کو وینٹی لیٹرز بنانے کے لیے استعمال کریں گے۔تاہم یہ کام وہ 20 اپریل سے شروع کریں گے، اور اس آسان ڈیزائن کی بدولت وہ جلد از جلد زیادہ سے زیادہ وینٹی لیٹرز بنا سکیں گے۔خیال رہے کہ امریکی صدر ڈانلڈ ٹرمپ نے دونوں کمپنیوں پر اس حوالے سے اپنی ٹویٹس میں تنقید کی تھی تاہم اب وہ ان کی تعریف کر رہے ہیں۔فورڈ تین شفٹس کے ذریعے 24 گھنٹے کام کر کے وینٹی لیٹرز بنانے کی کوشش کرے گا تاہم ماہرین کا کہنا ہے کہ امریکہ میں وینٹی لیٹرز کی سب سے ز

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم