پیر 23  ستمبر 2019ء
پیر 23  ستمبر 2019ء

اہم خبریں

پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ گرفتار

  اسلام آباد (دھرتی نیوز)قومی احتساب بیورو نے پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما خورشید شاہ کو آمدن سے زیادہ اثاثوں کے مقدمے میں گرفتار کر لیا ہے۔خورشید شاہ پر الزام ہے کہ انھوں نے اپنی آمدن سے زیادہ اثاثے بنائے ہیں جن میں پیٹرول پمپ، مختلف ہاؤسنگ سوسائٹیز میں بنگلوں کی تعمیر اور ہوٹلوں کے علاوہ بے نامی کاروبار کے الزامات شامل ہیں۔نیب حکام کا کہنا ہے کہ خورشید شاہ کو اسلام آباد کے علاقے بنی گالہ سے گرفتار کیا گیا ہے۔حکام کا کہنا تھا کہ ان معاملات میں تفتیش کی گئی جس میں ان کے بقول یہ ثابت ہوا کہ خورشید شاہ نے یہ اثاثے اپنی آمدن سے زیادہ بنائے ہیں۔واضح رہے کہ اس سے قبل انھی معاملات پر نیب نے تفتیش کی تھی جس میں خورشید شاہ کو ان الزامات سے بری کردیا گیا تھا تاہم ڈی جی نیب سکھر نے اس معاملے کی از سر نو تحقیقات کے لیے نیب کے چیئرمین کو خط لکھا تھا۔نیب نے پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور رکن قومی اسمبلی سید خورشید شاہ کے خلاف سات اگست سے تحقیقات کا اغاز کیا تھا اور انھیں متعدد بار تفتیشی ٹیم کے سامنے پیش ہونے کا کہا تھا۔نیب نے سید خورشید شاہ کو بدھ کو پیش ہونے کا حکم دیا تھا تاہم انہوں نے نیب کو خط لکھ کر یہ کہہ کر پیش ہونے سے معذوری ظاہر کی تھی کہ وہ اسلام آباد میں ہیں اس لیے وہ نیب کے سامنے پیش نہیں ہو سکتے۔اس صورت حال کے بارے میں نیب سکھر نے چیئرمین نیب کو آگاہ کیا جس کے بعد جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے خورشید شاہ کو گرفتار کرنے کا حکم دیا۔نیب حکام کے مطابق خورشید شاہ کو کل (جمعرات) کو اسلام آباد کی احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا جہاں سے ان کا راہداری ریمانڈ حاصل کر کے سکھر منتقل کیا جائے گا۔ادھر پاکستان پیپلز پارٹی نے خورشید شاہ کی گرفتاری پر سخت ردعمل کا اظہار کیا ہے۔پارٹی کے رہنماؤں نے کہا ہے کہ کسی بھی رکن قومی اسمبلی کو گرفتار کرنے سے پہلے سپیکر کو اطلاع دینا ضروری ہے لیکن خورشید شاہ کے معاملے میں ایسا نہیں کیا گیا۔خورشید شاہ سابق حکمراں جماعت پاکستان مسلم لیگ نواز کے دور میں قائد حزب اختلاف تھے اور انھوں نے ہی جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کا نام بطور نیب چیئرمین تجویز کیا تھا جس کی منظوری اس وقت کے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے دی تھی۔واضح رہے کہ سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی بھی ان دنوں نیب کی تحویل میں ہیں اور انھوں نے جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کو بطور چیئرمین نیب تعینات کرنے پر قوم سے معافی بھی مانگی ہے۔  

پاکستان

ٹیکس ایمنسٹی سکیم میں 3 جولائی تک توسیع

سلام آباد: (دھرتی نیوز) وفاقی حکومت نے ٹیکس ایمنسٹی سکیم میں آئندہ ماہ 3 جولائی تک توسیع کر دی ہے۔ یہ فیصلہ وزیراعظم عمران خان کے زیر صدارت اعلیٰ سطح اجلاس میں ہوا۔وزیراعظم عمران خان کی معاشی ٹیم کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کا کہنا تھا کہ اللہ تعالیٰ کا شکر ہے کہ بجٹ اچھے انداز میں پاس ہوا۔ جب اقتدار سنبھالا تو بحران کی صورتحال کا سامنا تھا۔ ہماری کوشش رہی ہے کہ عوام کے سامنے سچ بولا جائے۔ مشکل وقت سے نکلنے کے لیے اقدامات کیے جا رہے ہیں۔ بجٹ کا محور پاکستان کے شہری ہیں۔مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے کہا کہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 7 ارب ڈالر تک لانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم کرنے کے لیے درآمدات پر ڈیوٹی بڑھائی گئی۔ بجٹ میں ایسے اقدامات اٹھائے گئے ہیں جس سے کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم ہوگا۔انہوں نے بتایا کہ معاشی صورتحال میں بہتری لانے کے لیے دوست ملکوں سے 9 ارب بیس کروڑ ڈالر لیے۔ آئی ایم ایف کا بورڈ 3

انٹرنیشنل

متحدہ قومی موومنٹ کے بانی الطاف حسین لندن میں گرفتار

لندن (دھرتی نیوز،مانیٹرنگ ڈیسک) سکاٹ لینڈ یارڈ پولیس نے متحدہ قومی موومنٹ کے بانی الطاف حسین کو ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کر لیا ہے۔لندن پولیس نے اپنے بیان میں گرفتار شدہ شخص کا نام ظاہر نہیں کیا ہے تاہم بی بی سی اردو کے ثقلین امام کے مطابق ایم کیو ایم کی جانب سے تصدیق کر دی گئی ہے کہ سکاٹ لینڈ یارڈ کے اہلکاروں نے منگل کی صبح شمال مغربی لندن میں الطاف حسین کی رہائش گاہ پر چھاپہ مارا اور انھیں ساتھ لے گئے۔لندن کی میٹروپولیٹن پولیس نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ 11 جون کو ایک شخص کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ہے اور اس معاملے کا تعلق پاکستان میں ایم کیو ایم سے متعلقہ فرد کی جانب سے کی جانے والی تقریروں سے ہے۔بیان کے مطابق 60 برس سے زیادہ عمر کے اس شخص کو شمال مغربی لندن میں ایک مکان سے پولیس کریمنل ایویڈینس ایکٹ کے تحت گرفتار کیا گیا اور اس پر عالمی سطح پر جرائم پر اکسانے یا ان میں مدد دینے کا شبہ ہے۔بیان کے مطابق مذکورہ شخص کو جنوبی لندن ک

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم