بدھ 01 دسمبر 2021ء
بدھ 01 دسمبر 2021ء

اہم خبریں

راولاکوٹ، توہین آمیز مواد شوشل میڈیا پر شیئر کرنے کے الزام میں نوجوان گرفتار

ہجیرہ،راولاکوٹ(دھرتی نیوز)ہجیرہ پولیس نے ہجیرہ کے نواحی گاوں نڑول سے تعلق رکھنے والے ایک نوجوان فواد اختر کو سوشل میڈیا پر توہین آمیز مواد شیئر کرنے کے الزام میں اسلام آباد سے گرفتار کر کے راولاکوٹ تھانے میں پہنچا دیا۔ہجیرہ پولیس نے یہ مقدمہ مرکزی پولیس دفتر مظفراباد سے لکھے ایک خط کی روشنی میں درج کیا ہے جس میں ایسے لوگوں کی جانچ پڑتال کرنے کا کہا گیا تھا جو اپنی وال پر اس طرح کی توہین آمیز عبارت شیئر کرتے ہیں۔سردار فواد کے خلاف درج کی گئی ایف آئی آر میں میں ان پر الزام لگایا گیا ہے کہ سوشل میڈیا ویب سائٹ فیس بک فواد اختر نے معزز ججز صاحبان کے بارے میں توہین آمیز کلمات شیئر کیے ہیں۔ایف آئی ار میں دفعات 501,500,589y,489o شامل کیے گے ہیں۔مرکزی پولیس دفتر سے مکتوب  06 اکتوبر کو لکھا گیا جبکہ ایف آئی ار 13 اکتوبر کو درج کی گئی۔ایف آئی کی نقل ایف آئی اے سمیت دیگر متعلقہ اداروں کو بھی بھیجی گئی تا کہ فیس بک پر اس اکوئنٹ کو بند کروایا جا سکے۔ہجیرہ پولیس نے اسلام آباد پولیس کے تعاون سے فواد اختر کو اسلام آباد سے گرفتار کر کے راولاکوٹ پہنچا دیا ہے۔فواد آختر اپنا فیس بک  اکاونٹ سردار فواد کے نام سے چلاتا ہے۔وہ ایک سیاسی کارکن ہے۔گذشتہ انتخابات میں وہ امیدوار کے طور پر کاغذات بھی جمع کروا چکا ہے لیکن بوجوہ یہ کاغذات مسترد کر دئیے گے تھے۔وہ سوشل میڈیا پر سیاسی جماعتوں اور شخصیات پر کڑی تنقید کرتا رہتا ہے اور موجودہ وزیر اعظم آزادحکومت سردار عبدالقیوم نیازی پر بھی اسی طرح کی تنقید کر چکا ہے۔ایف آئی 13 اکتوبر کو درج کی گئی جبکہ 14اکتوبر کو سردار فواد نے اپنی آئی ڈی سے ایک پوسٹ شیئر کی تھی کہ وہ کسی سے ڈرتے نہیں اور جس نے گرفتار کرنا ہے وہ کر لیے۔”دھرتی“ کی تحقیقات سے یہ شک گذر رہا ہے کہ بظاہر ایف آئی ار میں ججز کے خلاف توہین آمیز کلمات شیئر کیے جانے کا الزام تو لگایا گیا ہے لیکن اصل میں وزیراعظم سمیت ان کی کابینہ کے بعض ممبران کے خلاف شیئر کی گئی پوسٹیں اس ایف آئی ار کا سبب بن سکتی ہیں۔  

پاکستان

عمر شریف کا جسد خاکی عبداللہ شاہ غازی مزار کے احاطے میں سپردخاک

کراچی(صباح نیوز) کامیڈی کے بے تاج بادشاہ عمر شریف کی نمازِ جنازہ کراچی کے علاقے کلفٹن میں واقع پارک میں ادا کردی گئی جس کے بعد عبداللہ شاہ غازی مزار کے احاطے میں سپردخاک کر دیا گیا۔عمر شریف کی نمازِ جنازہ مولانا بشیر فاروقی نے پڑھائی جس میں عوام کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔قبل ازیں شریف کا جسدِ خاکی گلشن اقبال میں واقع رہائش گاہ سے کلفٹن میں ان کے نام سے منسوب پارک میں پہنچایا گیا تھا۔ عمر شریف کی نمازِجنازہ میں سیاست و شوبز سے وابستہ شخصیات کے ساتھ ساتھ عوام کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔اس موقع پر پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری جنازہ گاہ کے اطراف موجود تھی جبکہ میت کی منتقلی کے سلسلے میں بلاول چورنگی سے ضیا الدین ہسپتال جانے والی سڑک کو ٹریفک کے لیے بند کردیا گیا تھا۔عمر شریف کی نماز جنازہ کے لیے سہ پہر 3 بجے کا وقت طے کیا گیا تھا تاہم شہریوں کی بڑی تعداد کی وجہ سے آدھے گھنٹے کی تاخیر سے ادا کی گئی۔کلفٹن میں واقع پارک میں سیکیورٹی کے س

انٹرنیشنل

امریکہ میں فیس بک کے نئے فیچر متعارف

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکہ میں فیس بک ایک نیا فیچر ٹیسٹ کر رہی ہے جہاں وہ صارفین سے یہ پوچھتے ہیں کہ انھیں اس بات کی پریشانی تو نہیں کہ ان کے جاننے والوں میں سے کوئی شدت پسندی کی طرف جا رہا ہو۔اس کے علاوہ کچھ صارفین کو یہ تنبیہی پیغام بھی بھیجا جائے گا کہ انھوں نے شدت پسندی پر مبنی مواد دیکھا ہے۔یہ دونوں فیچر فیس بک کے ری ڈائریکٹ انیشیٹیو کے تحت ٹیسٹ کیے جا رہے ہیں جس کا مقصد شدی پسندی کا مقابلہ کرنا ہے۔یہ پیغامات صارف کو ایک ایسے صفحہ پر از خود لے جاتے ہیں جہاں ان کے پاس اس سب سے نمٹنے کے لیے سپورٹ موجود ہوتی ہے۔عالمی میڈیا کے مطابق فیس بک کی ترجمان کا کہنا تھا کہ‘یہ ٹیسٹ ان دیگر بڑے اقدامات کا حصہ ہیں جہاں ہم ایسے لوگوں کی مدد اور انھیں وسائل فراہم کر رہے ہیں جنھیں شدی پسندانہ مواد کا سامنا کرنا پڑا ہو یا وہ کسی ایسے شخص کو جانتے ہوں جو کہ شدت پسند بن رہا ہو۔ان کا کہنا تھا کہ ان کی کمپنی غیر سرکاری تنظیموں اور سیکٹر کے ماہر

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم