دنیا کی بہترین ٹیکنالوجی سے نوجوان نسل کو آشنا کرنا وقت کی ضرورت ہے،تعلیمی کانفرنس سے مقررین کا خطاب

راولاکوٹ (دھرتی نیوز)تعلیم کے شعبہ میں کام کرنے والی آزاد کشمیر کی سب سے پرانی غیر سرکاری تنظیم سدھن ایجوکیشنل کانفرنس کے زیر اہتمام منعقدہ تعلیمی کانفرنس میں اس بات کا اعادہ کیا گیا کہ روایتی تعلیم کے ساتھ ساتھ فنی تعلیم کو عام کرنے اور دنیا بھر میں رائج بہتر تدریسی طریقہ تعلیم کو اپنانے کے لیے کوششیں تیز کی جائیں،دنیا کی بہترین ٹیکنالوجی سے نوجوان نسل کو آشنا کرنے کے ساتھ ساتھ تعلیمی اداروں کے اندر منشیات کے خاتمہ کے لیے بھر پور مہم چلائی جائے۔طبقاتی نظام تعلیم کا خاتمہ کیا جائے،کانفرنس جس کے دو سیشن تھے میں مختلف شعبہ جات سے تعلق رکھنے والے اسکالرز،پروفیسرز اور ڈاکٹرز نے مکالہ جات پڑھے اور پریزنٹیشن دی۔مختلف تعلیمی اداروں جن میں جامعہ پونچھ اور پونچھ میڈیکل کالج شامل تھا کے طلبہ سمیت سینکڑوں کی تعداد میں شرکاء شریک ہوئے،کانفرنس کے آغاز اور بعد ازاں پہلے اور دوسرے سیشن سے خطاب کرنے والوں میں پروفیسرڈاکٹر محمد نسیم خان،ڈاکٹر انیقہ مومنہ،سردار شازیب شبیر خان،پروفیسر ڈاکٹر سہیل اصغر،ائیر مارشل (ر) مسود اختر،ممتاز آرکیٹکٹ عدنان آمین،پروفیسر ڈاکٹر ندیم جاوید،ایمبسڈر محترمہ نائیلہ چوہان،میجر جنرل ڈاکٹر افتخار حسین،پروفیسر ڈاکٹر محمد خان،سردار محمد فاروق خان،سردار محمد صدیق خان (سیکرٹری ریٹائرڈ)،مولانا سعید یوسف خان،ڈاکٹر نجیب خان،سردار جاوید صادق اور سردار وسیم اعظم شامل تھے۔مقررین نے تعلیم سے وابستہ ہر شعبہ جن میں کینسر کے مرض کی بنیادی علامات،آرٹیفیشل انٹلیجنس،تعمیرات کے فن سمیت دیگر موضوعات زیر بحث لائے،مقررین نے دور جدید کے تقاضوں کو چلنجز سمجھ کر ان کا مقابلہ کرنے،تعلیم کے ساتھ ساتھ تربیت پر زور دیا اور کہا کہ بابائے پونچھ جنہوں نے اس تنظیم کی بنیاد ”تربیت“ کے عملی کام سے رکھی تھی ان کے مشن کو اسی صورت میں آگے بڑھایا جا سکتا ہے کہ ہم ان کے چھوڑے ہوئے ادھورے کام کو آگے بڑھائیں۔مقررین نے کہا کہ سدھن ایجوکیشنل کانفرنس کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ یہ سب سے پرانی تنظیم ہے۔موجودہ کانفرنس کا انعقاد کر کے بھی اس تنظیم کا بڑا کام کیاہے۔نوجوان نسل کو ڈیجیٹل دنیا سے جوڑنے کے لیے یہ کانفرنس بڑا اہم کردار ادا کرے گی۔کانفرنس کے آج دوسرے روز آنکھوں کی بیماریوں کا مفت علاج کیا جائے گا جبکہ رات کو ڈسٹرکٹ کمپلکس میں آل آزاد کشمیر مشاعرہ کا اہتمام کیا گیا ہے۔کانفرنس میں امریکہ سے خصوصی طور پر سردار فاروق خان اور ان کی اہلیہ نے شرکت کی۔کانفرنس کی میزبانی میں پروفیسر ڈاکٹر محمد نسیم خان اور سردار شاذیب شبیر نے اہم کردار ادا کیا۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں