مجھے خودکشی پر مجبور نہ کیا جائے، محمد انور

راولاکوٹ(دھرتی نیوز )ازاد کشمیر کے ضلع سدھنوتی سے تعلق رکھنے والے محمد انور ولد بشیر احمد نے فیڈرل انوسٹی گیشن ایجنسی(ایف آئی اے ) کو ایک درخواست دی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ وہ کم و بیش 12 سال بیرون ملک مزدوری کر کے کاروبار کی غرض سے وطن واپس آیا اور ریئل اسٹیٹ کا کام شروع کیا۔ میں اس فیلڈ میں بالکل نیا تھا ۔ میرے پاس دو بندے محمد فیصل اور شاہد محمود آئے (جن کے بارے میں بعد میں پتہ چلا کہ وہ پولیس کے حاضر سروس ملازم ہیں )۔ انہوں نے مجھے افر کی کہ ہمارے پاس کئی سو کنال اراضی ہے اگر آپ خریدنا چاہتے ہیں تو ہم سودا کروا سکتے ہیں۔ انہوں نے مجھے اس قدر ہیپاٹائز کیا کہ میں نے 80 لاکھ روپے کی رقم جس میں سے کچھ کیش جبکہ بقیہ رقم ان کے بنک اکاؤنٹ میں منتقل کر دی اور ان کے ساتھ اسٹام کر کے ان سے کہا کہ فی الوقت مجھے 05 مرلے جگہ نام پر کر کے دو تا کہ میں اپناآفس بنا سکوں۔انہوں نے کئی ماہ گذرنے کے باوجود زمین میرے نام نہ کی الٹا مجھے کہا کہ ایک کروڑ 35 لاکھ روپے مزید دو ۔ میرے پاس فوری طور پر رقم نہ تھی تو انہوں نے مجھے جال میں پھنسانے کے لیے جعلی اسٹام تیار کر کے کہا کہ ہم نے آپ کی جگہ ایک کروڑ پینتیس لاکھ کی پے منٹ کر دی ہے تم ایک کروڑ کا چک گارنٹی کے طور پر دے دو آور گاڑی بھی ہمارے نام کروا دو بے شک تم خود ہی استعمال کرتے رہنا۔بعد ازاں میرا چک ڈس آنر کروا کر میرے خلاف ایف آئی آر بھی درج کروا دی، گاڑی بھی زبردستی لے لی اور ایک مرلہ جگہ بھی نہیں دی۔ مذکورہ اراضی کا مالک اور ایک پراپرٹی ڈیلر بھی اسی گروہ کا سرغنہ نکلے۔ عاصم اور شاہد دنوں پولیس میں کنسٹیبل کے عہدے پر فائز ہیں۔ مجھے داد رسی دی جائے۔ اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ یہ ایک پورا گروپ ہے جو پراپرٹی کے نام پر لوگوں کو لوٹتے ہیں۔ ان کے ہر پر اپنے بندے ہیں جس کی وجہ سے کسی کی شنوائی نہیں ہوتی ۔انہوں نے انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب سے درخواست کی ہے کہ اگر مجھے انصاف نہیں مل سکتا تو غریب لوگوں کے لیے کم از کم ایک خودکشی پوائنٹ بنا دیں جہاں لکھا یو کہ ” پولیس کے ظلم کے ستائے ہوئے لوگوں کو اجازت ہے یہاں ا کر خودکشی کریں ” پولیس کے ان ظالم درندوں اورکھلی دہشت گردی سے تنگ ا کر میں خودکشی کرنے پر مجبور ہوں۔ اگر خودکشی نہیں کرتا ھوں تو پولیس کانسٹبل گیگ راجہ شاہد محمود ولد راجہ امیتاز علی کانسٹبل غضنفر ربانی ولد غلام ربانی ججوعہ اور ان کے ساتھ پورا گیگ جو غریب سادہ لوگوں کو لوٹتے ہیں مجھے اور میری فیملی کو قتل کر دیں گے کیونکہ وہ میری رقم واپس کرنے کی بجائے مجھے دھمکیاں دے رہے ہیں اور میرے خلاف من گھڑت مقامات بنا رکھے ہیں ۔ انہوں نے چیف جسٹس سپریم کوٹ سے بھی درخواست کی ہےکہ مجھے انصاف دلوایا جائے ۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں