بدھ 04  اگست 2021ء
بدھ 04  اگست 2021ء

سردار صغیر چغتائی کا سیاسی قتل ہوا،تحقیقات کی جائیں،بیٹے کا الزام

بنگوئیں (دھرتی نیوز)دودن قبل آزاد پتن کے مقام پر دریا جہلم میں گاڑی اور دو ساتھیوں سمیت لا پتہ ہونے والے ممبر قانون ساز اسمبلی سردار صغیر چغتائی کے بیٹے احمد صغیر نے الزام عائد کیا کہ میرے والد کی گاڑی کوحادثہ  پیش نہیں آیا بلکہ یہ ایک سیاسی قتل ہے۔وہ پی ٹی آئی  کے ایک اہم رہنماء تھے۔آزاد کشمیر کے لاکھوں لوگوں کی ایک امید تھے۔یہ ہمارے خاندان کے خلاف ایک سازش ہوئی ہے جس کی اعلیٰ پر انکوائری کی جانی چائیے۔سوشل ویڈیو پر جاری ایک ویڈیو پیغام میں انہوں نے کہا کہ متعلقہ ادارے اگر غیر جانبدارانہ تحقیقات کریں تو  بہت سارے حقائق سامنے آ سکتے ہیں۔بیان میں انہوں نے کہا کہ جس جگہ سے گاڑی دریا جہلم میں گئی ہے وہ ایک نا ہموار روڈ ہے جہاں زیادہ اسپیڈ سے گاڑی نہیں چلائی جا سکتی۔عینی شایدین کی بات اگر درست مانی جائے کہ دو گاڑیاں آپس میں ٹکرائی ہیں تو موقع پر کوئی چیز تو ملتی لیکن ایسا نہیں ہوا ہے۔دوسری گاڑی میں سوار بندے کی نعش کو اوپر لانا اور پھر نعش کا پھول جانا بھی مشکوک ہے۔میرے والد جس گاڑی میں سوار تھے ہمیں نہ اس گاڑی کا پتہ چلا اور نہ ہی میرے والدکا،لہذا حکومت آزادکشمیر و پاکستان اس واقعہ کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کروائے۔مجھے پورا یقین ہے کہ یہ ایک سیاسی قتل ہے جس کی کھوج لگانا ضروری ہے۔

آج کااخبار

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کالم